@Mussarat13 June 2023 at 02:22
‏نوسرباز  خائن نیازی رمنا تھانہ میں درج ایف آئی آر نمبر 255/23کے سلسلے میں ڈی آئی جی آپریشن اسلام آباد کے آفس میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہوا ذرائع کے مطابق خائن کو ایف آئی آر پڑھ کر سنائی گئی اور اس کے مختلف وڈیو کلپس دکھائے گئے جن میں خائن ڈی جی سی ،‏ڈی جی آئی ایس آئی اور چیف آف آرمی اسٹاف پر ان کے قتل کے بے بنیاد الزامات عائد کر رہا ہے ذرائع کے مطابق  خائن نے اپنے ان کلپس کو درست قرار دیا جس کے بعد جے آئی ٹی نے یوٹرن خائن سے کچھ سوالات پوچھے جو ذرائع کے مطابق کچھ یوں تھے
سوال: کیا یہ وڈیو کلپس آپ کے ہیں
جواب: جی ہاں
سوال:  کیا آپ کے پاس ان الزامات کے ثبوت ہیں جو آپ پیش کر سکیں
جواب: نہیں

سوال: کیا آپ کو جنرل فیصل نے براہ راست ایسی دھمکی دی
جواب: جی نہیں

سوال : تو پھر آپ نے الزامات کیوں لگائے
جواب:مجھے کسی نے بتایا تھا

سوال: آپ کے پاس اس بات کا کوئی ثبوت ہے  جواب : نہیں

سوال:  آپ نے ڈی جی آئی ایس آئی پر الزام کیوں لگایا
جواب: انہوں نے پریس کانفرنس کی تھی

سوال : کیا آپ کبھی جنرل فیصل سےملے جواب: نہیں

سوال : آپ ڈرٹی ہیری کسے کہتے ہو
جواب جنرل فیصل کو

تفتیش کے اختتام پر دگڑدلے خائن نیازی نے تمام وڈیو کلپس کو ایک بار پھر درست اور اپنا قرار دیا اور کہا کیا میں اب جا سکتا ہوں ذرائع کے مطابق جے آئی ٹی نے یوتھ مت کے مہاتما خائن کا بیان کاغذ پر قلم بند کیا اور الزام خائن سے اس پر دستخط لیے

گویا اپنی منجی ٹھوکنے کے جواز پر عمرانڈوز کا نام نہاد مرشد خود گُگھی مار آیا ہے اب کل کلاں کو منجی ٹھک گئی تو یوتھڑز واویلا ڈالیں گے خائن سانپ کو ناانصافی سے راستے سے ہٹایا گیا ہے۔۔۔۔!!
ا
یڈے تُسے انصاف دے مامے رہندے نی کرِے
Maa baap ki shaan and 5 others14 views
Comment
Share
Share
Be the first to write comment